خاندانی شرافت

حضور(صلی االلہ علیھ و سلم) کا خاندان و نسب نجابت و شرافت میں تمام دنیا کے خاندانوں سے اشرف و اعلٰی ہے اور یہ حقیقت ہے کہ آپ کے بد ترین دشمن کفار مکہ کبھی اس کا انکار نہ کر سکے۔ چناچہ حضرت ابوسفیان نے جب وہ کفر کی حالت میں تھے بادشاہ روم ہرقل کے بھرے دربار میں اس حقیقت کا اقرار کیا کہ ھو فینا ذونسب یعنی نبی (صلی االلہ علیھ و سلم) عالی خاندان ہیں(بخاری ج1 ص4)
حالانکہ اس وقت وہ آپ کے بد ترین دشمن تھے اور چاہتے تھے کہ اگر ذرا بھی گنجائش ملے تو آپ کی ذات پاک پر کوئی عیب لگا کر بادشاہ روم کی نظروں سے آپ کا وقار گرا دیں مسلم شریف کی روایت ہے کہ اللہ تعالٰی نے حضرت اسماعیل (علیہ السلام) کی اولاد میں سے کنانہ کو برگزیدہ بنایا اورکنانہ میں سے قریش کو چنا اور قریش میں سے بنی ھاشم کومنتخب فرمایا اور بنی ھاشم میں سے مجھ کو چن لیا۔
(مشکٰوۃ فضائل سیدالمرسلین)
بہرحال یہ ایک مسلمہ ھقیقت کہ
لہ النسب العالی فلیس کمثلہ
حسیب نسیب منعم متکئرم
یعنی حضور انور (صلی االلہ علیھ و سلم) کا خاندان اس قدر بلند مرتبہ ہے کہ کوئی بھی حسب و نسب والا،اور نعمت والا آپ کے مثل نہں ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s