پروفیسر طاہر القادری مجلس عزا میں

پروفیسر طاہر القادری مجلس عزا میں

پروفیسر طاہر القادری کا حضور غوث اعظم سید عبد القادر جیلانی رضی اللہ عنہ کی نسبت سے قادری کہلانا سراسر دھوکہ ہے ۔ اس لئے کہ پروفیسر صاحب کا مسلک و عمل حضور غوث اعظم رضی اللہ عنہ کے بالکل خلاف ہے ۔غوث اعظم نے نام بنام مخالفین صحابہ کرام و خلفاء ء عظام رضی اللہ عنہ کا رد فرمایا اور بدیں الفاظ حدیث نقل فرمائی کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :۔
“ آخر زمانہ میں ایک قوم ہو گی ۔ جو میرے صحابہ کی شان میں تنقیص و کمی کرے گی۔ خبردار! ان کے ساتھ کھانا نہ کھاؤ ۔ خبردار! ان کے ساتھ پانی نہ پیو۔ خبردار! ان کے ساتھ نکاح و رشتی داری نہ کرو۔ خبردار! ان کے ساتھ نماز نہ پڑھو ۔ خبردار! ان کی نماز جنازہ نہ پڑھو۔ ان پر لعنت پڑ چکی ہے ۔ ( کتاب ۔ غنیتہ الطالبین ص 688)
لیکن پروفیسر صاحب اس حدیث نبوی و مسلک قادری کی صریح خلاف ورزی و بے وفائی کرتے ہوئے علی الاعلان مخالفین صحابہ کرام علیہم الرضوان کی مجالس و ان کی خصوصی “ مجلس عزا“ میں شریک ہوتے ہیں ۔ مجلس عزا کی رونق بڑھاتے ہیں اور حدیث نبوی میں باربار خبردار فرماکر مخالفین صحابہ کرام کے بائیکاٹ کی جو حد بندی فرمائی گئی ہے نہ صرف خود حدیث نبوی کی حد بندی توڑتے ہیں بلکہ عوام کو بھی حد بندی توڑنے کی ترغیب و جسارت دلاتے ہیں ۔ جس کی تازہ اور نمایاں مثال پیش نظر روزنامہ جنگ میں مجلس عزا میں پروفیسر صاحب کی شمولیت و خصوصی خطاب کا اشتہار ہے۔

روزنامہ جنگ میں شائع شدہ مجلس عزا کا اشتہار

روزنامہ جنگ لاہور
ہفتہ 14 محرم الحرام 1425 ھ 6 مارچ 2004

مجلس عزا
7 مارچ 2004، بروز اتوار 2 بجے دوپہر
خطیب :
شجر حسین شجر۔ آغا سید علی موسوی
خصوصی خطاب :
ڈاکٹر محمد طاہر القادری
موضوع :
ایمان ابو طالب ۔
علامہ صاحب ٹھیک 15۔3 پر خطاب فرمائیں گے ۔
جاوا ہاوس 109۔ کالج روڈ جی او آر 1 شاہراہ قائد اعظم ، لاہور ۔
یک نہ شد دوشد:
پیش نظر اشتہار کے مطابق پروفیسر صاحب کی مجلس عزا میں شمولیت و خصوصی خطاب کے علاوہ ان کا موضوع بھی ایمان ابو طالب لکھا ہے ۔ جو مخالفین صحابہ کرام کا خاص موضوع و عقیدہ و مسلک ہے اور پروفیسر صاحب نے شیعہ پروگرام کے شعار خصوصی “ مجلس عزا“ میں شمولیت و ان کے عقائد ایمان ابو طالب پر خصوصی خطاب کر کے حدیث نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور مذہب اہلسنت و قادری مسلک سے انحراف و بے وفائی کرکے شیعیت کو فروغ دینے مخالفین صحابہ کو خوش کرنے اور اپنے نیم شیعہ ہونے کا خوب مظاہرہ کیا ہے۔ تعجب ہے ان سنی علماء و مشائح پر جو پروفیسر کی کھلم کھلا شیعہ نوازی و قادری مسلک و مسلک امام احمد رضا سے بےوفائی اور پروفیسر صاحب کی دوغلہ پالیسی و دوزخی کے باوجود انہیں سنی سمجھنے کے دھوکہ کا شکار ہو رہے ہیں اسی موقع پر کہا جاتا ہے کہ :۔

دورنگی چھوڑ کر یک رنگ ہوجا
سراسر موم ہو یا سنگ ہوجا

طاہر القادری نے کہا ہے کہ
“ ابوطالب کے ایمان کے حوالہ سے ذہنوں میں کوئی سوال ہی اٹھنا نہیں چاہیئے “
حالانکہ سوال اٹھنا تو درکنار خود طاہر القادری کے امام و ممدوح اعلٰی حضرت امام احمد رضا فاضل بریلی رحمتہ اللہ علیہ نے علماء امت و اکابرین اہلسنت کی ترجمانی فرماتے ہوئے ایمان ابع طالب کے رد میں “ شرح المطالبفی مبحث ابی طالب “ کے نام سے ایک مفصل و مدلل ضحیم کتاب تصنیف فرمائی ہے ۔ جس میں ایک سو تیس کتب تفسیر و عقائد و فقہ کے حوالہ سے ایمان ابو طالب کی تردید فرمائی ہے اور علمی و تحقیقی و تاریخی حوالہ جات کا ذخیرہ جمع فرمادیا ہے۔ ( فجزاھم اللہ خیر الجزاء )
افسوس! ہے طاہر القادری کی صلحکیت دوغلہ پالیسی کم علمی غیر تحقیقی روش اور علماء امت و اکابرین اہلسنت سے قطع تعلقی و بے وفائی پر۔

ہوشیار اے سنی مسلماں ہوشیار

۔

Advertisements

One thought on “پروفیسر طاہر القادری مجلس عزا میں

  1. http://video.google.com/videoplay?docid=1861231599963646763&q=tahir+ul+qadri&total=798&start=10&num=10&so=0&type=search&plindex=3

    The topic of this video is same as the topic in that newspaper! And the speaker is none but Tahir-ul-Qadri with his beloved Shia brothers. So, I can say that the advertize on Jang newspaper is proofed with video now. Am I right?
    Now atleast our misguided Sunni Muslims should open their eyes!

    Mumtaz Hussain Attari Qadiri.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s