کھجور کے 25 مدنی پھول

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
الصلوٰۃ و السلام علیک یارسول اللہ

کھجور کے 25 مدنی پھول

امیر اہلسنت حضرت مولانا محمد الیاس عطار قادری رضوی دامت برکاتہم العالیہ

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! احادیث مبارکہ میں سحری اور افطار میں کھجور کے استعمال کی کافی ترغیب موجود ہے۔ کھجور کھانا، اس کو بھگو کر اس کا پانی پینا، اس سے علاج تجویز کرنا یہ سب سنتیں ہیں۔ الغرض اس میں لاتعداد برکتیں اور بےشمار بیماریوں کا علاج ہے چنانچہ کھجور کے بارے میں 25 مدنی پھول پیش خدمت ہیں۔

مدینہ1: طبیبوں کے طبیب، اللہ عزوجل کے حبیب صلی اللہ تعالٰی علیہ وآلہ وسلم کا فرمان عالیشان ہے‘ عالی رتبہ “عجوہ“ (مدینہ منورہ کی سب سے عظیم کھجور کا نام) میں ہر بیماری سے شفا ہے۔ (مسلم) “ابو نعیم“ وغیرہ کی روایت کے مطابق روزانہ سات “عجوہ“ کھجور کھانے سے جذام (یعنی کوڑھ) میں فائدہ ہے۔

مدینہ2: میٹھے میٹھے آقا صلی اللہ تعالٰی علیہ وآلہ وسلم کا فرمان جنت نشان ہے “عجوہ“ کھجور جنت سے ہے اس میں زہر سے شفاء ہے۔ (ابن النجار) بخاری شریف کی روایت کے مطابق جس نے نہار منہ “عجوہ“ کھجور کے سار دانے کھا لئے اس دن اسے جادو اور زہر بھی نقصان نہ دے سکیں گے۔

مدینہ3: سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ تعالٰی عنہ سے روایت ہے کھجور کھانے سے قولنج (یعنی بڑی انتڑی کا درد) نہیں ہوتا۔ (ابو نعیم)

مدینہ4: طبیبوں کے طبیب، اللہ عزوجل کے حبیب صلی اللہ تعالٰی علیہ وآلہ وسلم کا فرمان شفاء نشان ہے‘ نہار منہ کھجور کھاؤ اس سے پیٹ کے کیڑے مر جاتے ہیں۔ (مسند فردوس)

مدینہ5: اللہ عزوجل کے محبوب دانائے غیوب منزہ عن العیوب صلی اللہ تعالٰی علیہ وآلہ وسلم کا فرمان عافیت نشان ہے “ میرے نزدیک جن عورتوں کو حیض میں کثرت سے خون آتا ہے ان کے لئے کھجور سے بہتر اور مریض کیلئے شہد سے بہتر کسی چیز میں شفاء نہیں۔“ (ابو نعیم، ابو الشیخ) (اس مرض میں عورت تازہ پکی ہوئی کھجور استعمال کرے، حدیث پاک میں مقدار بیان نہیں کی گئی اگر روزانہ سات دانے کھائے تو انشاءاللہ عزوجل فائدہ ہو جائے گا۔)

مدینہ6: جو فاقہ کی وجہ سے کمزور ہو گیا ہو اس کیلئے کھجور بہت مفید ہے کیونکہ یہ غذائیت سے بھرپور ہے۔ اس کے کھانے سے جلد توانائی بحال ہو جاتی ہے۔ لٰہذا افطار میں کھجور کھانے کی ترغیب دلائی گئی ہے۔

مدینہ7: روزے میں فوراً برف کا ٹھنڈا پانی پی لینے سے گیس، تبخیر اور جگر کے ورم کا سخت خطرہ ہے۔ کھجور کھا کر ٹھنڈا پانی پینے سے نقصان کا خطرہ ٹل جاتا ہے، مگر سخت ٹھنڈا پانی پینا ہر وقت نقصان دہ ہے۔

مدینہ8: کھجور اور کھیرا، ککڑی، نیز کھجور اور تربوز ایک ساتھ کھانا سنت ہے۔ اس میں بھی حکمتوں کے مدنی پھول ہیں الحمدللہ عزوجل ہمارے عمل کیلئے تو اس کا سنت ہونا ہی کافی ہے اطباء کا کہنا ہے کہ اس سے جنسی و جسمانی کمزوری اور دبلاپن دور ہوتا ہے۔ مکھن کے ساتھ کھجور کھانا بھی سنت ہے، بیک وقت پرانی اور تازہ کھجوریں کھانا بھی سنت ہے۔ ابن ماجہ میں ہے، جب شیطان کسی کو ایسا کرتا دیکھتا ہے تو افسوس کرتا ہے کہ پرانی کے ساتھ نئی کھجور کھا کر آدمی تنومن (یعنی مضبوط جسم والا) ہو گیا۔

مدینہ9: کھجور کھانے سے پرانی قبض دور ہوتی ہے۔

مدینہ10: دمہ، دل، دہ، مثانہ، پتا اور آنتوں کے امراض میں کھجور مفید ہے۔ یہ بلغم خارج کرتی، منہ کی خشکی کو دور کرتی، قوت باہ بڑھاتی اور پیشاب آور ہے۔

مدینہ11: دل کی بیماری اور کالا موتیا کیلئے کھجور کو گھٹلی سمیت کوٹ کر کھانا مفید ہے۔

مدینہ12: کھجور کو بھگو کر اس کا پانی پی لینے سے جگر کی بیماریاں دور ہوتی ہیں۔ دست (جلاب) کی بیماری میں یہ پانی مفید ہے۔ (رات کو بگھو کر صبح اس کا پانی پئیں)

مدینہ13: کھجور کو دودھ میں ابال کر کھانا بہترین مقوی (یعنی طاقت دینے والی) غذاء ہے۔ یہ غذا بیماری کے بعد کی کمزوری دور کرنے کیلئے بےحد مفید ہے۔

مدینہ14: کھجور کھانے سے زخم جلدی بھرتا ہے۔

مدینہ15: کھجور یرقان ( پیلیا ) کیلئے بہترین دواء ہے۔

مدینہ16: سیدی محمد احمد ذھبی رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ فرماتے ہیں حاملہ کو کھجوریں کھلانے سے انشاءاللہ عزوجل لڑکا پیدا ہو گا جو کہ خوبصورت بردبار اور نرم مزاج ہو گا۔ (روزانہ سات کھجوریں کھلائیں)

مدینہ17: تازہ پکی ہوئی کھجوریں صفراء (یعنی “پت“ جسمیں قے کے ذریعے کڑوا پانی نکلتا ہے) اور تیزابیت کو ختم کرتی ہیں۔

مدینہ18: کھجور کی گھٹلیاں جلا کر اس کا منجن لگانے سے دانت چمکدار ہوتے ہیں اور منہ کی بدبو دور ہوتی ہے۔

مدینہ19: کھجور کی جلی ہوئی گھٹلیوں کی راکھ لگانے سے زخم کا خون بند ہوتا اور زخم بھر جاتا ہے۔

مدینہ20: کھجور کی گھٹلیوں کو آگ میں ڈال کر ناک سے دھونی لینا بواسیر کے مسوں کو خشک کرتا ہے۔

مدینہ21: کھجور کے درخت کی جڑوں یا پتوں کی راکھ سے منجن کرنا دانتوں کے درد کیلئے مفید ہے۔ جڑوں یا پتوں کو ابال کر اس سے کلیاں کرنا بھی دانتوں کے درد میں فائدہ مند ہے۔

مدینہ22: جس کو کھجور کھانے سے کسی قسم کا نقصان (Side Effect ) ہوتا ہو تو انار کا رس، یا خشخاش یا کالی مرچ کے ساتھ استعمال کرے انشاءاللہ عزوجل فائدہ ہوگا۔

مدینہ23: ادھ پکی اور پرانی کھجوریں بیک وقت کھانا نقصان دہ ہے اسی طرح کھجور اور انگور یا کشمش یا منقہ ملا کر کھانا، کھجور اور انجیر بیک وقت کھانا بیماری سے اٹھتے ہی کمزوری میں زیادہ کھجوریں کھانا، آنکھوں کی بیماری میں کھجوریں کھانا بھی مضر یعنی نقصان دہ ہے۔

مدینہ24: ایک وقت میں 5 تولہ سے زیادہ کھجوریں نہ کھائیں۔ پرانی کھجور کھاتے وقت کھول کر اندر سے دیکھ لینا سنت ہے۔ کیونکہ اس میں بعض اوقات سرسریاں (یعنی چھوٹے چھوٹے لال کیڑے) ہوتی ہیں۔ لٰہذا صاف کرکے کھائیں۔ بیچنے والے چمکانے کے لئے اکثر سرسوں کا تیل لگاتے ہیں۔ لٰہذا بہتر یہ ہے کہ کھجوروں کو چند منٹ کیلئے پانی میں بگھو دیں۔ تاکہ مکھیوں کی بیٹ اور میل کچیل چھوٹ جائے۔ پھر دھو کر استعمال فرمائیں۔ درخت کی پکی ہوئی کھجوریں زیادہ مفید ہوتی ہیں۔

مدینہ25: مدینہ منورہ کی کھجوروں کی گھٹلیاں پھینک دینا بےادبی ہے کسی ادب کی جگہ ڈال دیں یا دریا برد کر دیں، بلکہ ہو سکے ہو سروتے سے باریک ٹکڑے کرکے ڈبیہ میں ڈال کر جیب میں رکھ لیں اور چھالیہ کی جگہ استعمال کرکے اس کی برکتیں لوٹیں۔ مدینہ منورہ سے ہو کر آئی ہوئی ہر چیز ( خواہ وہ دنیا کے کسی بھی خطے کی ہو ) کا عشاق ادب کرتے ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s