معروف نعت خواں خورشید احمد کراچی میں انتقال کرگئے

معروف نعت خواں خورشید احمد کراچی میں انتقال کرگئے

کراچی (اسٹاف رپورٹر) بین الاقوامی شہرت یافتہ نعت خواں خورشیداحمد طویل علالت کے بعد 51/ برس کی عمر میں یہاں جمعر ات کو انتقال کرگئے، وہ کافی عرصے سے علیل تھے، چند روز قبل دماغی شریان پھٹنے کے سبب انہیں مقامی اسپتال میں داخل کیا گیاتھا جہاں انہیں فالج کا حملہ ہوا جس کے بعد وہ جانبر نہ ہوسکے۔ انہوں نے سوگواروں میں بیوہ، دو صاحبزادے اور دو صاحبزادیوں سمیت ان کے ہزاروں مداح بھی شامل ہیں۔ خورشید احمد کی نماز جنازہ بعد نماز جمعہ ادا کی جائیگی جبکہ ان کی تدفین عبداللہ شاہ غازی کے قبرستان میں ہو گی جہاں سابق وزیر مملکت مذہبی امور ڈاکٹر عامر لیاقت نے اپنی قبر کے لئے مخصوص جگہ ان کی تدفین کیلئے دیدی ہے۔ خورشید احمد رحیم یار خان میں پیدا ہوئے، لگ بھگ 30/ سال وہ ثناء رسول میں سرگرم رہے۔ایک ہفتہ قبل برین ہیمرج کے بعد اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا، ان کے دو آپریشن کئے گئے تھے جس کے بعد وہ مسلسل کومے میں تھے۔ ۔ خورشید احمد کے انتقال کی اطلاع ملتے ہی سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین، صدیق اسماعیل، ممتاز کمپیئر صاحبزادہ تسلیم احمد صابری، نعت گو شاعر صبیح رحمانی اور غلام محمد قادری اسپتال پہنچ گئے اور اپنے عہد کے منفرد نعت خواں کا آخری دیدار کیا اور لوا حقین سے تعزیت کی اور انہیں دلاسہ دیا، اس موقع پر جذباتی مناظر دیکھنے میںآ ئے اور خورشید احمد کے بھائی اور صاحبزادگان عامر لیاقت حسین سے گلے لگ کر پھوٹ پھوٹ کر روتے رہے۔ لاتعداد اعزازات اور ایوارڈز حاصل کرنیو الے خورشید احمد کے چند معروف اعزازات میں صدارتی ایوارڈ برائے حسن کارکردگی، نگار ایوارڈ، پی ٹی وی ایوارڈ اور امریکا میں نیو جرسی کے میئر کے ہاتھوں دیا جانے والا خصوصی ایوارڈ بھی شامل ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s