اعلیٰ حضرت احمد رضا خان بریلوی کسی نئے فرقے کے بانی نہیں، علامہ کوکب اوکاڑوی

مولانا اوکاڑوی اکادمی (العالمی) کے سربراہ خطیب ملت علامہ کوکب نورانی اوکاڑوی نے کہا ہے کہ اعلیٰ حضرات امام اہل سنت مولانا شاہ احمد رضا خان بریلوی  اسلام اور ملت اسلامیہ کے محسن اور چودہویں صدی ہجری میں مجدداعظم شمار ہوئے ہیں اور ان کی علمی فقہی عظمت کا اعتراف سمتوں میں اپنوں بیگانوں نے کیا ہے، اُنہوں نے ہرگز کوئی نئے عقائد وضع نہیں کیے نہ ہی وہ کسی نئے فرقے کے بانی ہیں بلکہ اُنہوں نے کتاب و سنت کی صحیح ترجمانی کرتے ہوئے اہل سنت و جماعت کی اس دور میں صحیح پاس بانی کی ہے جب کہ دین فروش اور ابن الوقت لوگ دین کو بدلنا چاہ رہے تھے، علامہ اوکاڑوی  نے کہا کہ بریلوی ہرگز کوئی فرق نہیں بلکہ اہل سنت کی صحیح پہچان کا عنوان ہے اور اعلیٰ حضرت فاضل بریلوی رحمتہ اللہ علیہ کی نسبت سے یہی ظاہر کیا جاتا ہے کہ بریلوی وہ سنی ہیں جن کے عقائد کی ترجمانی اعلیٰ حضرت مولانا شاہ احمد رضا خان نے کی ہے، علامہ اوکاڑوی نے کہا کہ اعلیٰ حضرت بریلوی کی ایک ہزار سے زائد کتب اور ان کی تعلیمات و تحریرات موجود ہیں اور ان میں کتاب و سنت کے خلاف یا ان سے متضاد کوئی بات پیش نہیں کی جا سکی ہے بلکہ ان کے مخالفین نے بھی انہیں سچا عاشق رسول اور عالم حق تسلیم کیا ہے، علامہ اوکاڑوی نے جیو ٹی وی کے پروگرام ”میرے مطابق “ میں ڈاکٹر اسرار کی زبانی کہے گئے ان جملوں پر شدید احتجاج کیا ہے جن میں اُنہوں نے اعلیٰ حضرت فاضل بریلوی علیہ الرحمہ کے بارے میں نامناسب الفاظ و انداز اختیار کیا اُنہوں نے کہا کہ اس پروگرام میں صحیح العقیدہ اہل سنت و جماعت بریلوی کا غلط تعارف پیش کرنے کی سازش کی گئی ہے جو قابل مذمت ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s